skip to Main Content
سورۃ فاتحہ بطورشفاء 
حضرت ابو سعید خدریؓ بیان کرتے ہیں کہ صحابہ کا ایک قافلہ سفر میں تھا۔ راستہ میں ایک جگہ قیام کیا۔ وہاں قبیلہ کے سردار کو سانپ نے ڈس لیا۔ ایک صحابی نے سورۃ فاتحہ پڑھ کر دم کیا تو وہ شفایاب ہو گیا۔ا ور انعام دیا ۔ صحابہ نے یہ واقعہ رسول اللہؐ کو بتایا تو آپ نے فرمایا تمہیں کس نے بتایا کہ سورۃ فاتحہ میں دم اور شفا بھی ہے۔
(صحیح بخاری کتاب فضائل القرآن۔ فضل سورۃ الفاتحہ حدیث نمبر4623)

image_printپرنٹ کریں