skip to Main Content
محمد اسحٰق عاجز  ؔ۔یو کے: حمدیہ کلام   بر زمین حضرت مسیح مو عود  علیہ اسلام

کس طرح سے شکر ہو تیرا میرے پروردگار
رحمتوں کا تیری مجھ پر ہے نہیں کوئی شمار
خاص اپنے فضل سے کیں  مشکلیں میری آساں
بن ترے کوئی نہیں ہے اس جہاں میں غمگسار
تیری الفت نے مجھے ذرے سے گوہر کردیا
ورنہ ذرہ ذرہ میرا تھا فقط گرد و غبار
بار عصیاں سے ہے میرے دل کی ناؤ ڈولتی
فضل سے اپنے خدایا پار تو اس کو اتار
دید تیری کی تمنا بڑھ رہی ہے روز و شب
ایک تیرے حسن نے مجھ کو کیا ہے بے قرار
اک جھلک دکھلا مجھے تو آج اپنے نور کی
 تا  میں  کہلاؤں  جہاں میں عاشق و  شیدائے  یار
طاقت پرواز بخشے تو مجھے گر اے خدا
تیری جانب میں بڑھوں  اڑتا ہوا دیوانہ وار
نامہ اعمال تو خالی کا خالی رہ گیا
ہے مگر عاجز  کا تیری بخششوں  پر انحصار

image_printپرنٹ کریں