skip to Main Content
اللہ کے دین کی اشاعت

حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں۔
احمدیوں کی اکثریت اس بات کا ادراک رکھتی ہے کہ یہ زمانہ جو تکمیل اشاعت اسلام کا زمانہ ہے جس کے لئے اللہ تعالیٰ نے حضرت مسیح موعودؑ کو بھیجا ہے جو کہ مختلف زبانوں میں قرآن کریم کی اشاعت اور ترجمہ کے ذریعہ سے ہورہا ہے ۔حضرت مسیح موعودؑ کی کتب کی اشاعت اور جماعت کے لٹریچر کے ذریعہ سے ہورہا ہے ۔ مساجدکی تعمیر کے ذریعہ سے ہو رہاہے۔مشن ہاوسز کے قیام کے ذریعہ سے ہورہا ہے ۔ جامعات کے قیام کے ذریعہ سے ہو رہا ہے ۔اس وقت ایشیاء میں بھی ،افریقہ میں بھی ، یورپ میں بھی ، نارتھ امریکہ میں بھی ، انڈونیشیا میں بھی جامعات کا قیام عمل میں آچکا ہے جہاں سے مربیان اورمبلغین فارغ ہوکر تبلیغ کر رہے ہیں۔جب یہ ساری چیزیں احمدیوں کے علم میں آتی ہیں تو ان کو پتا ہے کہ اس کے لئے مالی قربانی کی بھی ضرورت ہے اور پھر وہ مالی قربانی کرتے ہیں ۔ اسی طرح جیسا کہ حضرت مسیح موعودؑنے بھی یہ فرمایا کہ مخلوق کی ہمدردی بھی جزوایمان ہے۔اس ہمددری کے تحت ہسپتالوں ، سکولوں کا قیام اور اس کے علاوہ بھی جماعت میں امداد کا نظام ہے ۔اور یہ سارا کچھ بھی مخلصین کی قربانیوں کے ذریعہ سے ہی ہو رہا ہے۔ جنہیں اللہ تعالیٰ پر یہ یقین ہے کہ وہ ان کی قربانیوں کو اس دنیا میں بھی نوازتا ہے اور اگلے جہان میں بھی نوازے گا۔ان شاء اللہ

(خطبہ جمعہ فرمودہ 03نومبر 2017ء)

image_printپرنٹ کریں